گلگت بلتستان کے واحد انجینئرنگ کالج کو نامعلوم افراد نے آگ لگا دی

گلگت شہر سے کچھ ہی کلومیٹر دور چھلمس داس کے مقام پر زیر تعمیر گلگت بلتستان کے واحد انجینئرنگ کالج کی عمارت جو قراقرم انٹرنیشنل یونیورسٹی کا منصوبہ ہے کو نامعلوم افراد نے رات گئے آگ لگا دی ہے۔

نامعلوم افراد کی جانب سے منصوبے پر کام کرنے والے ٹھیکیدار کی قیمتی مشینری اور لاکھوں کے دیگر سامان کو بھی آگ لگائی گئی ہے. ذرائع کے مطابق یہ منصوبہ عنقریب اسی کروڑ روپے کا منصوبہ ہے۔

ذرائع کے مطابق واقعے سے کچھ گھنٹے پہلے انتظامیہ نے زیر تعمیر انجنیرنگ کالج کے ارد گرد تعمیر شدہ مکانات، درخت اور دیگر چیزوں کو منہدم کیا تھا۔

صحافی عاقل حسین کے مطابق سابقہ وزیر اعلیٰ گلگت بلتستان حافظ حفیظ الرحمن کے دور حکومت میں انتظامیہ چھلمس داس کو خالصہ سرکار قرار دیکر قبضہ کرنا چاہتی تھی مگر عوام کے شدید ریکشن کی وجہ سے یہ ممکن نہیں ہوا آخر کار سابقہ سی ایم حفیظ الرحمن کے دور حکومت کے آخری دنوں میں عوام اور انتظامیہ کے درمیان ایک معاہدہ طے پایا جس کے مطابق قراقرم یونیورسٹی کے قریب جو دیوار ہے اُس ایریا کی زمین قراقرم یونیورسٹی کو دیا گیا اور باقی چھلمس داس عوام کا حق قرار دیا گیا اُس کے بعد مقامی لوگوں نے وہاں مکان بھی تعمیر کرنا شروع کر دیا۔