پشتون قوم پرست لطیف آفریدی ، پاکستان سپریم کورٹ بار ایسوسی ایشن کا سربراہ منتخب

پاکستان خیبر پختون خوا کے نامور وکیل اور پشتون قوم پرست عبد اللطیف آفریدی نے پاکستان سپریم کورٹ بار ایسوسی ایشن کا انتخاب جیت لیا ہے اور وہ تنظیم کے صدر منتخب ہوئے ہیں۔

پاکستان میں سول سوسائٹی کے کارکنوں ، وکلاء اور سیاست دانوں نے لطیف آفریدی کی جیت کو پاکستان کی موجودہ سیاسی صورتحال میں جمہوریت کیلے نیک شگون قرار دیا ہے اور اسٹیبلشمنٹ کے اقدامات کے خلاف فتح کے طور پر دیکھا جارہا ہے اور کہا ہے کہ وہ غیر قانونی اور غیر آئینی اقدامات کو روکنے کے لئے آزاد عدلیہ کی بنیادوں کو مضبوط بنانے کے لئے کام کریں گے۔

جمعرات کو ہونے والے سپریم کورٹ بار ایسوسی ایشن کے انتخابات میں ، عبدالطیف آفریدی عاصمہ جہانگیر کے دھڑے کے صدارتی امیدوار تھے اور حامد خان کے دھڑے کے عبد الستار صدارت کے لئے انتخاب لڑ رہے تھے۔

اس انتخاب میں ، عبداللطیف آفریدی 546 ووٹوں کے ساتھ کامیاب ہوئے اور ان کے حریف کو 376 ووٹ ملے۔

لطیف آفریدی کی پارٹی نے صدارت کے تحت تمام نشستوں پر کامیابی حاصل کی ہے ، جسے وکلاء اور سول سوسائٹی کے کارکنوں نے پورے پاکستان میں جشن منایا۔

ممتاز قانون دان طارق افغان کا کہنا ہے کہ جہاں ملک کی تمام ریپبلکن جماعتیں پی ڈی ایم کے نام پر فوج اور اسٹیبلشمنٹ کے خلاف صف آرا ہو گئیں ہیں ، آزاد عدلیہ کا کردار اور بھی اہم ہو گیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ اس انتخاب میں بھی اسٹیبلشمنٹ کا ایک حامی لطیف آفریدی کے لئے کھڑا تھا ، لیکن وکلاء نے ان کے پورے پینل کو مسترد کردیا اور یہ ثابت کردیا کہ وہ باقی ملک میں آزاد عدلیہ ، سپریم پارلیمنٹ اور قانون کی حکمرانی کے حق میں ہیں۔

انہوں نے کہا کہ اس انتخاب میں بھی اسٹیبلشمنٹ کا ایک حامی لطیف آفریدی کے مقابلے میں کھڑا تھا ، لیکن وکلاء نے ان کے پورے پینل کو مسترد کردیا اور یہ ثابت کردیا کہ وہ باقی ملک میں آزاد عدلیہ ، سپریم پارلیمنٹ اور قانون کی حکمرانی کے حق میں ہیں۔

انسانی حقوق کے کارکن اور سابق سینیٹر افراسیاب خٹک نے ٹویٹر پر لکھا کہ لطیف آفریدی نے اپنے پیشے کے وقار کے علاوہ ملکی عوام کے حقوق کے لئے ہمیشہ انتھک جدوجہد کی ہے۔

شمالی وزیرستان کے قبائلی ضلع سے تعلق رکھنے والے خیبر پختونخوا اسمبلی کے ممبر میر کلام وزیر نے کہا کہ لطیف آفریدی کا انتخاب تمام جمہوری قوتوں اور انصاف پسندو کے مفاد میں ہے۔

انہوں نے ٹویٹر پر لکھا ، “جمہوریت اور جمہوریت سے محبت کرنے والے ہی اس ملک کو بچا سکتے ہیں۔

سوشل میڈیا پر ہزاروں کارکنوں نے ملک میں انصاف ، امن وامان کی سمت عبد اللطیف آفریدی کے انتخاب کو ایک اہم قدم قرار دیا ہے۔