محمد عامر کاموال ، کابل یونیورسٹی کے لیکچرر کا آنکھوں دیکھا حال بیان کرتے ہوئے

آج دوپہر سے قبل مسلح حملہ آوروں کابل یونیورسٹی میں داخل ہوگئے تھے۔

خدشہ ہے کہ طلباء اور اساتذہ اس حملے میں شہید ہوسکتے ہے۔

کابل یونیورسٹی کے ایک لیکچرر ، محمد عامر کاموال ، جو حملے کے وقت یونیورسٹی میں تھے ، نے بتایا کہ فائرنگ ابھی جاری ہے ، لیکن پولیس نے علاقے کو گھیرے میں لے لیا ہے۔

استاد کاموال نے اس حملے کا انکھوں دیکھا حال سنایا۔

انٹرویو سننے کے لئے نیچے دیئے گئے لنک پر کلک کریں