لاہور: سکھ حکمران رنجیت سنگھ کے مجسمے کی توڑ پھوڑ کے الزام میں نوجوان گرفتار

شاہی قلعہ کے قریب رکھے ہوئے سکھ حکمران مہاراجہ رنجیت سنگھ کے مجسمے کی توڑ پھوڑ کرنے پر ایک مذہبی جماعت سے وابستہ ایک نوجوان کو جمعہ کے روز لاہور میں گرفتار کیا گیا تھا۔

ظہیر کے نام سے شناخت ہونے والے شخص نے پولیس کے ہاتھوں پکڑے جانے سے پہلے مجسمے کے ایک بازو کو نقصان پہنچایا تھا۔

اس شخص نے اپنے اس فعل کا اعتراف کرتے ہوئے بتایا کہ اس نے ایسا اسلیے کیا کیونکہ رنجیت سنگھ نے اپنے دور حکومت میں مسلمانوں کے خلاف مختلف جرائم کا ارتکاب کیا تھا۔

ملزمان کے خلاف مقدمہ درج کرلیا گیا ہے اور پولیس مزید تفتیش کے لئے معاملے کی تحقیقات کر رہی ہے۔