سوات میں ایک چار سالہ بچے کی عصمت دری کرنے پر ایک شخص کو گرفتار کرلیا گیا ہے۔

چارباغ پولیس اسٹیشن کے سربراہ ایاز خان نے 8 نومبر کو بتایا کہ عالم گنج کے علاقے میں 7 نومبر کی رات کو ایک چار سالہ لڑکا زیادتی کا نشانہ بنا تھا ، جس کے بعد اہل خانہ نے پولیس میں رپورٹ درج کروائی تھی۔

ایاز خان کے مطابق انہوں نے ایک ۱۴ سالہ لڑکے کو عصمت دری کے الزام میں گرفتار کیا اور تحقیقات کا آغاز کیا۔

پاکستان میں بچوں کے حقوق کے لئے کام کرنے والی ایک غیر سرکاری تنظیم ساحل کا کہنا ہے کہ گذشتہ ایک سال میں پاکستان میں عصمت دری کے ۲۸۰۰ سے زیادہ واقعات ہوئے ہیں ، جن میں سے چھ فی صد خیبر پختونخوا میں رپورٹ ہوئے ہیں۔